Deeniyat by Abul Ala Maududi Free Download PDF

0
2244
Deeniyat by Abul Ala Maududi PDF
Deeniyat by Abul Ala Maududi PDF

Deeniyat by Abul Ala Maududi Free Download PDF

Deeniyat by Abul Ala Maududi Free Download PDF

Deeniyat by Abul Ala Maududi

Deeniyat by Abul Ala Maududi

یہ کتاب سب سے پہلے1937ء میں شائع ہوئی تھی۔ اِسلام کو سمجھنے کے لیے اس کو اس قدر مفید پایا گیا کہ بہت جلدی اسے برصغیر ہند میں عام مقبولیت حاصل ہوگئی، یہاں تک کہ اب اس کا تینتیسواں ایڈیشن شائع ہورہا ہے۔ اس کی جامعیت، اختصار اور عام فہمی کی وجہ سے عام تعلیم یافتہ لوگوں میں بھی یہ مقبول ہوئی ہے اور بکثرت اسکولوں اور کالجوں میں اس کو شریک نصاب بھی کیا گیا ہے۔ اردو زبان کے علاوہ دنیا کی بہت سی دوسری زبانوں میں بھی اس کے ترجمے ہوچکے ہیں اور مزید ہوتے چلے جارہے ہیں۔ اس وقت تک جن زبانوں میں اس کے تراجم ہمارے علم میں آئے ہیں وہ یہ ہیں: عربی۔ فارسی۔ انڈونیشی۔ سواحلی۔ ہاؤسا۔ انگریزی۔ فرانسیسی ۔جرمن۔ ہسپانوی۔ جاپانی۔ تھائی۔ سنہالی۔ بنگلہ ۔ سندھی۔پشتو۔ گجراتی۔ ہندی۔ ٹامل۔ مالاباری۔ ڈینش۔ پرتگالی۔ اس کو مسلمانوں ہی نے نہیں بلکہ غیر مسلموں نے بھی پسند کیا ہے اور بہت سے غیر مسلموں کو اس کے مطالعہ سے اِسلام قبول کرنے کا شرف حاصل ہوا ہے ، بعض مسلم ممالک میں اس کا ترجمہ مدارس میں بطور ِ نصاب بھی پڑھایا جاتا ہے۔

Download or read online pdf islamic Urdu Book Deenyat by Syed Abulala Maududi. Syed Maudoodi Born in Hyderabad 1903 . 1918 Started calling as essayist in “Bijnore” news paper 1920 Appointed as article chief ” consistently Taj” , Jabalpur 1925 Appointed as editor step by step “Muslim 1925 Appointed as administrator ” Al-jamiat”, New Delhi 1927 Wrote ” Al-Jihad fil Islam 1930 Wrote and appropriated “Deenyat” 1932 Started ” Tarjuman-ul-quran” from Hyderabad 1938 Moved to “Pathankot” to Darul Islam secured by Chaudhry Niaz Ali Khan 1941 Foundation get-together of Jamaat-e-Islami, named as Amir 1942 Jamaat headquarter moved to Pathankot 1943 Started structure “Tafheem ul quran” 1948 Campaign for Islamic constitution and government 1948 Sentenced to Jail 1949 Government recognized Jamaat determination for Islamic constitution 1953 Sentenced to death for his attested part in the fomentation against the Ahmadiyah association. He was sentenced to death by a military court, yet the sentence was never passed on out.[1] 1953 Death sentence changed over to life confinement 1955 Released from restorative office 1958 Martial law, blacklist on Jamaat Islami 1964 Sentenced to Jail 1964 Released from Jail 1972 Completed Tafheem-ul (quran translation) 1972 Quit as Ameer Jamaat 1979 Died.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here